Ads Top

پاکستان میں انڈین ڈرامہ دکھانا صحیح یا غلط

Views: 97 Share it Share it

پاکستانی چینل فلمیزیا کی مالک کمپنی لیو کمیونیکیشن کے چیلنج کے مطابق لاہور ہائی کورٹ نے پیمرا کی طرف سے لگائی جانے بھارتی ڈراموں پر پابندی کو ختم کرنے کا حکم دیا ہے۔

یہ مدعہ کافی عرصے سے زیر بحث رہا کہ جب بھارتی فلم پر اگر پاکستان میں پابندی نہیں تو ڈراموں یا دیگر ٹی وی پروگرامز پر پابندی کیوں ہے۔ جس پر پاکستانی چینل فلمیزیا نے لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے کو چیلنج کرتے ہوئے عدالت سے درخواست کی تھی کہ جب سینیما میں بھارتی فلم دکھائی جارہی ہے تو ٹی وی پر کیوں نہیں۔

یہ معاملہ پاکستان میں کافی عرصہ آنکھ مچولی کھیلتا رہا کہ جب بھی ہمارے تعلقات بھارت سے خراب ہوتے ہیں ہم پاکستان میں فوری طور پر بھارتی میڈیا کا بائیکاٹ کرلیتے ہیں۔ جبکہ ٹورینٹ اور سی ڈی کے زریعے پاکستان میں پھر بھی وہی فلم باآسانی دستیاب ہوجاتی ہیں مگر اسکے باوجود بھی ٹی وی پر بھی انڈین کانٹینٹ پر مکمل پابندی لگ جاتی ہے۔

لاہور ہائی کورٹ کے کہنے پر پیمرا کو اپنے فیصلے پر نظر ثانی کرنا پڑا اور بالاخر یہ فیصلہ لیو کمیونیکیشن کے حق میں گیا۔

پاکستانی میڈیا اس وقت ڈراموں میں پوری دنیا میں چھایا ہوا ہے اور پاکستانی لوگ اپنے ہی ڈراموں کو زیادہ پسند کرتے ہیں۔ پاکستانی سینیما بھی اب کافی حد تک اچھی فلم مہیا کر رہا ہے جس سے اس انڈسٹری پر کافی اثر پڑنا ہے۔


Home Ads